9

دی گریٹ لیڈر

دی گریٹ لیڈر، مذہبی انتہا پسندوں اور لبرل فاشسٹوں کے راستے کی بہت بڑی رکاوٹ ہے۔ آج کل یہ گریٹ لیڈر اُن طاقتور لوگوں کے دل میں کانٹا بن کر چبھ رہا ہے جو چاہتے ہیں کہ پاکستان بھی اسرائیل کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کر لے۔ یہ وہی دی گریٹ لیڈر ہے جسے بوقتِ ضرورت مذہبی طبقہ دنیا کا سب سے بڑا مسلمان اور سیکولر ازم کے دعویدار حسبِ خواہش بہت بڑا سیکولر ثابت کرنے کے جتن کرتے ہیں۔

ستم ظریفی دیکھئے کہ آج کچھ مذہبی لیڈروں سے لے کر بعض لبرل اور سیکولر عناصر اسرائیل کے ساتھ دوستی کے حق میں قرآن کی آیتوں کے حوالے بھی دے رہے ہیں اور قومی مفاد کا رونا بھی رو رہے ہیں لیکن جب صہیونی ریاست کے بارے میں دی گریٹ لیڈر کے موقف کو سامنے لایا جاتا ہے تو یہ مذہبی لیڈر اور سیکولر دانشور لاجواب ہو جاتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں