6

پی ڈی ایم اور پیپلز پارٹی کی دو کشتیوں پر سواری

آصف علی زرداری کا شمار مولانا فضل الرحمٰن کی طرح انتہائی عقلمند سیاست دانوں میں ہوتا ہے۔ بطور حکمران ان کا رویہ نسبتاً زیادہ جمہوری رہا اور اپنے مخالفین یا میڈیا کو انتقام کا نشانہ نہیں بنایا۔ اٹھارہویں آئینی ترمیم بھی اُن کا بڑا سیاسی کارنامہ تصور کیا جاتا ہے۔

چین کے ساتھ سی پیک کی بنیاد رکھنے اور امریکہ کو ناراض کرکے چین اور روس کی طرف خارجہ پالیسی کا رخ موڑنے کا سہرا بھی ان کے سر ہے۔ بطور حکمران وہ میاں نواز شریف یا عمران خان کی نسبت اسٹیبلشمنٹ سے بھی اچھے انداز میں کھیلتے رہے اور اِس تناظر میں ایک وقت میں یہ نعرہ فروغ پاگیا کہ ایک زرداری سب پر بھاری لیکن پتا نہیں اُن کی عقل کو کیسز کا خوف لاحق ہو گیا ہے، اِس پر سندھ کی حکمرانی کی محبت غالب آگئی ہے یا پھر وہ نواز شریف کی بےوفائی کی وجہ سے انتقام کے جذبات کا شکار ہو گئے کہ کچھ عرصہ سے عجیب و غریب سیاست کرنے لگے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں