8

جاپان ؛ ٹوئٹر کے ذریعے 9 لڑکیوں کو جنسی زیادتی کے بعد قتل کرنے والے کو سزائے موت

ٹوکیو: جاپان میں ایک عدالت نے’ٹوئٹر کلر‘ کے نام سے مشہور سفاک قاتل کو 15 سے 26 سال کی 9 لڑکیوں کو جنسی زیادتی اور قتل کرنے کا الزام ثابت ہونے پر سزائے موت سنادی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق جاپان میں سماجی رابطے کی مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ ٹوئٹر پر گھریلو پریشانیوں اور ذہنی دباؤ کے باعث خودکشی پر آمادگی کا اظہار کرنے والی نوجوان لڑکیوں کو پھنسا کر انہیں ہلاک کرنے والے 39 سالہ تاکاہیرو شیریسی کو مقامی عدالت نے سزائے موت سُنا دی ہے۔

ملزم نے ستمبر میں گرفتاری کے بعد بھری عدالت میں جاپان میں ٹویٹر پر اپنی زندگی ختم کرنے کے کا اظہار کرنے والے 15 سے 26 سالہ 9 نوجوانوں کو خودکشی میں مدد دینے کے بہانے پہلے جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے اور پھر مختلف طریقوں سے قتل کرنے کا اعتراف کیا تھا۔
ملزم کے وکلا نے مطالبہ کیا تھا کہ ملزم پر لگائے گئے الزامات کم کیے جائیں کیونکہ مقتولین کو خودکشی کے خیالات آتے تھے اور انھوں نے اپنے قتل کے لیے رضامندی بھی ظاہر کی تھی۔

کیٹاگری میں : Crime

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں