7

بچپن میں گھریلو تشدد، جوانی میں ناگہانی موت کی وجہ بن سکتا ہے

مشرقی آسٹریلیا: اگر بچے کو بالخصوص ابتدائی عمر میں ہی گھروں میں حد سے زیادہ تشدد، نظرانداز کیے جانے اور ہر طرح کے جور و جفا کا سامنا کرنا پڑے تو اس سے دیگر بچوں کے مقابلے میں اوائل عمر میں فوت ہونے کا خطرہ دوگنا ہوسکتا ہے۔

اپنی نوعیت کے پہلے اور وسیع مطالعے سے معلوم ہوا ہے کہ پوری دنیا کے مختلف ممالک اور معاشروں میں 15 سے 50 فیصد بچوں کو خود ان کے اہلِ خانہ کی جانب سے نظرانداز کرنے اور بہت شدید ظلم وزیادتی کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔ اس میں والدین کا نمایاں کردار ہوتا ہے۔

اس صورتحال کے بعد بچہ تعلیم سے دور رہ جاتاہے، بے راہروی اور نشے کی جانب راغب ہوتا ہے، جرائم کا ارتکاب کرتا ہے، رشتوں میں توازن نہیں رکھ پاتا اور روزگار کی تلاش میں دقت محسوس کرتا ہے۔ یہ تمام عوامل اس کی نفسیاتی، جسمانی اور دماغی کیفیات متاثر کرتے ہیں۔ اس سے پوری شخصیت متاثر ہوتی ہے اور یوں موت کے کنارے تک لے جاسکتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں