8

سماجی مدد سے نفسیاتی اور دماغی امراض میں کمی ہوسکتی ہے

کوبیک: اگر اہلِ خانہ، دوست اور سماج مل کر بالغان کی مدد اور حوصلہ افزائی کریں تو اس سے دماغی ونفسیاتی امراض کی شرح کم ہوسکتی ہے۔

یہ تحقیق امریکی جرنل آف امریکن آف میڈیکل ایسوسی ایشن میں شائع ہوئی ہے۔ اس پرتحقیق کرنے والوں میں میری کلاؤڈے جیفری سرِ فہرست ہیں جو مِک گِل یونیورسٹی میں نفسیاتی کاؤنسلنگ اور اس سے وابستہ تعلیم کے ماہر ہیں۔ ان کی تحقیق بتاتی ہے کہ دوست اور اہلِ خانہ کا ساتھ رہے تو اول انسان نفسیاتی عوارض سے دور رہتا ہے جن میں ڈپریشن، گھبراہٹ، خودکشی کے خیالات اور خودکشی کی کوشش کرنا سرفہرست ہے۔ پھر دوست اور اہلِ خانہ ہی ان کیفیات کو دور کرنے میں غیرمعمولی اہم کردار ادا کرتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں